میں آنسوں اور کٹوتیوں کے بارے میں کیا کرسکتا ہوں

Audiopedia Urdu سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
QR for this page

https://www.audiopedia.org/ur/%D9%85%DB%8C%DA%BA_%D8%A2%D9%86%D8%B3%D9%88%DA%BA_%D8%A7%D9%88%D8%B1_%DA%A9%D9%B9%D9%88%D8%AA%DB%8C%D9%88%DA%BA_%DA%A9%DB%92_%D8%A8%D8%A7%D8%B1%DB%92_%D9%85%DB%8C%DA%BA_%DA%A9%DB%8C%D8%A7_%DA%A9%D8%B1%D8%B3%DA%A9%D8%AA%D8%A7_%DB%81%D9%88%DA%BA

Click Code to Download

کبھی کبھی عصمت دری آنسو اور کٹوتیوں کا سبب بن کر جننانگوں کو نقصان پہنچاتا ہے۔ یہ عام طور پر درد کا سبب بنتے ہیں ، لیکن وقت کے ساتھ دور ہوجاتے ہیں۔ اگر وہاں بہت زیادہ خون بہہ رہا ہو تو ، آپ کو آنسوؤں کو سلائی کرنے کے لئے تربیت یافتہ ایک صحت کارکن کو دیکھنے کی ضرورت ہوسکتی ہے۔

چھوٹے کٹوتیوں اور آنسوؤں کے ل::

  • اپنے تناسل کو ہر دن 3 بار گرم پانی میں بھگو دیں جو ابل کر ٹھنڈا ہوچکا ہے۔ ابلتے پانی میں کیمومائل کے پتے ڈالنے سے آنسوؤں کو سکون ملتا ہے اور تندرستی میں مدد ملتی ہے۔یا آپ آنسوؤں پر مسببر کے پودے سے جیل ڈال سکتے ہیں۔
  • پیشاب کرتے وقت اپنے جننانگوں پر پانی ڈالیں تاکہ یہ جل نہ سکے۔ بہت زیادہ مائع پینے سے پیشاب کمزور ہوجاتا ہے لہذا یہ کم جلتا ہے۔
  • انفیکشن کی علامتوں پر نگاہ رکھیں: پھٹی ہوئی جگہ سے گرمی ، پیلا مائع (پیپ) ، بدبو آ رہی ہے ، اور تکلیف ہوتی ہے جو بدتر ہو جاتی ہے۔
  • پرتشدد جنسی تعلقات کے بعد خواتین میں مثانے یا گردے کا انفیکشن ہونا بھی عام ہے۔
Sources
  • Burns, A. A., Niemann, S., Lovich, R., Maxwell, J., & Shapiro, K. (2014). Where women have no doctor: A health guide for women. Hesperian Foundation.
  • Audiopedia ID: ur020319